CBH_broadcast_logo_cashma2_wide-01.png
 

معلومات کے لئے

چشمہِ حیات کیا ہے؟

 

چشمہِ حیا ت کا تعلق اُن تمام لوگوں کو جو ذہنی اور دِلی اطمینان کے متلاشی ہیں اور جو اپنی روزمرہ زندگی سے متعلق اپنے دِلوں اور ذہنوں پر بہت سے اَن گنت سوالوں کا بوجھ لئےہوئے  ہیں  ۔اور چشمہ ِ حیات  ایسے تمام لوگوں کو اُن کے تمام سوالات  کے جوابات کی اُمید مہیا کرتا ہے۔ چشمہِ حیات روحانی عالم میں موجودتاریکی  میں  بیٹھے لوگوں کو الہیٰ روشنی سے منور ہونے کی  امید دِلاتا ہے۔ چشمہِ حیات  کرسچن بروڈ کاسٹنگ ہوپ (سی۔ بی۔ ایچ) کی جانب سے اردو کے علاوہ دَس اور مختلف زبانوں میں نشر کیا جارہا ہے۔

اُمید کس لئے؟

 

اُمید ہی کے باعث ایک بہتر دن  ، بہتر مُستقبل اور بہتر زندگی کی خاہش لئے ہوئے ہم ہر صبح نیند سے بیدار ہوتے ہیں۔ بہتردن ، بہتر زندگی اور بہتر مُستقبل سے متعلق مسائل  پر بات کرنا ہی چشمہِ حیات کا مقصد ہے ۔ چشمہِ حیات کا مقصد  "اُمید "ہے ۔ اور اُمید کا تعلق ہماری ایمانی زندگی سے بھی جُڑا ہے ۔ چشمہ حیات کے پروگرام کے ذریعہ اُس ایمانی امید کو اجاگر کرنا ہی اس پروگرام کا مقصد ہے۔ کیونکہ یہ امید ہی ہے جس کے ذریعہ سے ہم مسیح میں قائم رہ کر اُسے اپنا زندہ خُدا قبول کرتے ہیں۔

ڈائریکٹر - چشمہِ حیات 

سموئیل جارج پاکستان کے شہر کراچی میں پیدا ہوئے۔ وہ اپنے ماں باپ کی اکلوتی اولاد ہیں۔ سموئیل جارج نے اپنی ابتدائی تعلیم کراچی کے سینٹ پیٹرک ہائی اسکول سے مکمل کی، اور اِس کے بعد علمِ الہیات میں چار سالہ ڈگری Oral Roberts University ا مریکہ سے  مکمل کی۔ اس کے بعد وکالت پڑھنے کی غرض سے   امریکہ میں University of Tulsa, College of Law میں بھی تعلیم حاصل کی۔ اور اس کے بعد Triune Biblical University  سے   ڈاکٹر آف    منسٹری کی ڈگری بھی حاصل کی۔ اِس وقت وہ بطور بائبل ٹیچر، پاسٹر اور 225 کلیسیاؤں کی پاکستان کے مختلف شہروں میں خدمت  کر رہے ہیں۔سموئیل جارج  اُن سب کے لئے جو سچائی ، اطمینان اور امید کے متلاشی ہیں ایک بہترین رہنما ئی اور حوصلہ افزائی کرنے والی شخصیت ہیں۔ 

 

"یہ میرے لئے نہایت خوشی کی بات ہے کہ  ایمان ، امید اورمحبت  کا پیغام اِس دنیا میں موجود   خُدا کے اُن تمام فرزندوں تک پہنچے گا جو اردو زبان بول  اور سمجھ سکتے ہیں۔ "

SAM.jpeg
ROZ.png

آن لائن پاسٹر/پروڈیوسر ۔ چشمہِ حیات

 

رضیہ مُشتاق کی پیدائش پاکستان کے شہر لاہور میں ہوئی تھی اور پیدائش کے کچھ ماہ بعد ہی اُن کی فیملی کراچی میں رہائش پذیر ہو گئی۔ رضیہ مُشتاق نے اپنی ابتدائی تعلیم سینٹ انتھونی کیتھولک سکول سے حاصل کی۔ اوردورانِ تعلیم اُسی سکول میں ہی خُدا کی جانب سے اُن کےلئے خدمت کا بُلاوا بھی ظاہر ہوا کہ آئندہ مستقبل میں  وہ اپنی مسیحی قوم کی خدمت کے لئے چُن لی گئی ہیں۔ 2012  میں رضیہ مُشتاق نے پانی کا بپتسمہ لیا۔ ایک Law firm  میں بطور  law clerk  کا کام کرنے کا تجربہ بھی  حاصل ہوا ۔ رضیہ مشتاق نے بطور آفس اسسٹنٹ ، اور بطور بائبل ٹیچر ہونے کے ساتھ ساتھ اپنی تعلیم کو مزید آگے بڑھایا اور St. Thomas’ Theological College  کراچی سے علمِ الہیات میں بی ۔ٹی۔ ایچ اور پھر ایم۔ڈیو کی ڈگری حاصل کی ۔ رضیہ مُشتاق کے نزدیک یہ سب کچھ اُن کے مقصد سے منسوب تھا  جو اُن پر واضح تھا کہ وہ یسوع کی اُمید کو اِس دُنیا کے تمام لوگوں تک لے جانا چاہتی ہیں۔

"یہ میرے دل کی خاہش اور بوجھ ہے کہ میں کلام کی خوشخبری کو دنیا کے اُن تمام اردو زبان بولنے اور سمجھنے والوں تک لے کر جاؤں جو دنیا کے مختلف حصوں میں رہتے ہیں۔ کلام کی خوشخبری کو بذریعہ ریڈیو، اور ٹی  وی چینلز کے ہم دنیا  میں موجود بہت سے لوگوں تک لے جا سکتے ہیں۔ کیونکہ لوگ اپنے گھروں سے براہِ راست نشرہونے والے پروگرامز  کو خصوصاً دینی تدریسی پروگرامز کو بہت پسند کرتے اور دیکھتے ہیں۔"

Naran_Kaghan_valley of Pakistan_nature of Pakistan_Boats in Pakistan_Lake saif ul Muluk_sa

میں اِس لئے آیا کہ وہ زندگی پائیں اور کثرت سے
پائیں۔

 

سنو۔۔۔

Struggling Working Women in Pakistan .jpg
 

رابطہ کریں۔

اپنے پیغام کے لئے آپ کا شکریہ